Qeemti Batein Urdu Quotes Collection

Qeemti Batein Urdu Quotes Collection, Baaz dafa aik line insan ki zindagi ko badal dyti hai. kuch batein asi hoti hain janhein bar bar parhne ka man karta hai aur usy jab bhi parha jata hai ya suna jata hai to ajeeb se kafiyat aur saroor aata hai. is post mein asi he baaton ki collection upload kar raha hon jysi parh kar aur sun ki ap ki life mein zaroor change aaye ga.

چھوٹی چھوٹی نیکیا ں کرنے سے گریز نہ کرو کیونکہ
کڑکتی دھوپ میں ابر کا اک ٹکڑا بھی ابر رحمت
ثابت ہوتا ہے چاہے وہ برسے یا نہ برسے

Choti Choti Naikiyan karne se guraiz na karo,

kiyoun k karkati dhoop mein abar ka aik tokra bhi

abar rehmat sabat hota hai chaye wo barsy ya na barsay

دلچسپی کو طلب مت بننے دو کیونکہ طلب
کی شدت بڑھ کر ضرورت بن جاتی ہے
اور ضرورت بڑھ کر کمزوری

Dilchaspi ko talab mat banene do

kiyoun talab ki shadat barh kar zaroorat ban jati hai aur

zaroorat barh kar kamzoori

جو عزت کرناجانتا ہے  محبت کرنے کا
اہل وہی ہوتا ہے
محبت پر عزت کو فوقیت ہے
اور جس نگاہ میں عزت نہیں وہ محبت
کے رنگ بھرنے کےلائق ہی نہیں ہوتی

Jo Azzat karna janta hai

mohbbat karne ka ahel wohi hai

mohbbat per azzat foqait hai aur

jis nagaha mein azzat nahin wo

mohbbat ke rang bharne ky like he nahi hoti

اچھے انسانوں کی توفہرست بنائی جا سکتی ہے برے
انسانوں کی نہیں   وہ بیشمار
ملتے ہیں اور ہر جگہ ہوتے ہیں

Achay insano ki to fehrast banai ja sakti hai

buray insaano ki nahi wo beshumar milty hain

aur har jaga hotay hain

آدمی اچھا تھا
یہ الفاظ انسان کو تب ملتے ہیں
جب سماعتیں سننے کے قابل نہیں رہتیں
خدارا    ! زندہ لوگوں کی قدر کیحئے

Adami acha tha yeh alfaz insan ko tab milty hain

jab samatein sunene ky qabil nahin rehtein, khudara zinda logon ki qadar karin.

اگر آپ کمرہ امتحان میں بیٹھے ہی نہیں
امتحان نہیں دیا تو نتیجے میں
آپ کا نام کیونکر ہوگا ؟
بڑے نتائج بڑے امتحانوں کے بعد ملتے ہیں 

Agar kamra imthan mein bethy he nahin

imthan nahi dia to netajy mein ap ka naam kiyoun kar ho ga?

baray nataaj barhy imthano ky bad milty hain

دُعائیں  دینے والے سے بڑھ کر دُنیا میں سخی نہیں
اور دُعائیں سمیٹنے والے سے بڑھ کر دُنیا میں
کوئی دولت مند نہیں

Duain dayne waly se barh kar

dunia mein sakhi nahi aur

duain samaytne waly se barh kar dunia mein

koi doulat mand nahi

زمیں اور اہل زمین کے درمیان
بکھری اچھی باتوں اور عادتوں کو
ایسے چنو جیسے پرندے زندگی کے لیے رزق چنتے ہیں

zameen aur ahel zameen ky darmiyan

bakhri achi baton aur adataton ko

asay chuno jaysy parnday zindagi kay ley razzq chuntay hain

سفر شوق میں کیوں کا نپتے ہیں پاؤں ترے
آنکھ رکھتا ہے تو پھر آنکھ چراتا کیا ہے
عمر بھر اپنے گر یباں سے الجھنے والے
تو مجھے میرے ہی سائے سے ڈراتا کیا

Safar e shoq mein kiyoun kampaty hain paon tere

aankh rakhta hai to phir aankh churata kiya hai

umer bhar apne gariban se uljhene waly

to mujhe mere he saye se darata kia hai

چار چیزوں کو چار چیزوں سے دھویاکرو
زبان کو ذکر سے   آنکھوں کو آنسوؤں سے
گناہوں کو استغفار سے اور دل کو خوف خداسے

Chaar cheezon ko chaar cheezon se dhoya karo

zaban ko zakar se aankhon ko aanson se

gunhaon ko astakhfar se aur dil ko khuf e khuda se

اپنے اخلاق اور کردار کو ہمیشہ عمدہ رکھو
کیوں کہ اس سے خون اور
خاندان کی پہچان ہوتی ہے

Apne akhlaq aur kardar ko hamsha unda rakho

kiyoun k is se khoon aur khandan ki pehchan hoti hai

توڑنا نہیں جوڑنا سیکھو کیوں کہ توڑنے
والوں کی حویلیاں ویران اور جوڑنے والوں
کی قبریں بھی آباد رہتی ہے

torna nahi jorna seekho kiyoun k torne

walon ki huwiliyan waran aur

jurne walon ki qabarin bhi abad rehti hain

انسان اس وقت آزاد تھا جب فون تار
کے ساتھ بند ھا ہوا تھا
جب سے فون آزاد ہوا ہے اس نے انسان
کو اپنے ساتھ باندھ لیا ہے

insan us waqat azad tha jab phon taar kay sath bandha huwa tha

jab phone se azad huwa hai is ne

insan ko apne sath baand liya hai

دولت ایک ایسی تتلی ہے جسے
پکڑتے پکڑتے آدمی اپنوں سے
بہت دور نکل جاتا ہے

Doulat aik asi tatli hai jasy pakrty pakrty Adami apno se bhot door nikal jata hai

ہم ایک ٹرانسمشن ٹاور کی طرح ہیں
 جہاں سے ہمارے خیالات
اور فیلنگز سگنلز کی طرح یونیورس
کی طرف جاتے ہیں اور وہاں
سے اسی فریکونسی والی چیزوں کو زندگی میں لے آتے ہیں 

Hum aik transmission tower ki tarha hain

jahan se hamary khayalat aur feelings k signals ki tarha univers ki taraf jatay hain aur wahan se asi frequncy wali cheezon ko zindagi mei nlay aaty hain

امیر آدمی غصہ کرتا  ہے تو لوگ کہتے ہیں
صاحب کا بی پی ہائی ہوگیا ہے
جب غریب آدمی غصہ کرتا  ہے تو کہتے ہیں
اس کا دماغ خراب ہوگیا ہے

ameer adami gussa karta hai to log kehty hain

sahab ka BP high ho gya hai

jab gareeb adami gussa karta hai to kehty hain is ka damag khrab ho gya hai

Exit mobile version