Zindagi kia hai

Zindagi kia hai

زندگی کیاہے ؟
آکر نہائے اور نہا کر چلے گئے
سمجھ میں آئے تو غور کرنا
غرور نہیں

انسان اس زندگی پر
اس طرح خوش ہوتا ہے
جو گھنٹوں کے گزرنے سے
گھٹتی جاتی ہے

بہتر شخص وہ ہے
جو توبہ کی اُمید پر گناہ کرے
اورزندگی کی اُمید پر توبہ کرے

زندگی میں آدھی عمر تک پیسہ کمایا
پیسہ کمانے میں اس جسم کو بیکار کیا
باقی آدھی عمر تک اسی پیسے کو
جسم ٹھیک کرنے میں لگایا
نہ جسم بچا نہ پیسہ

زندگی ایک شمع کی مانند ہے
جو ہوا میں رکھی گئی ہو

زندگی کے ہاتھ نہیں ہوتے
مگر کبھی کبھی وہ ایسا تمانچہ مارتی ہے
جو پوری عمر یاد رہتا ہے

Zindagi kia hai

جن کی زندگی میں بہت بھیڑ ہوتی ہے
وہاں نکلنا ہی ہمارے لیئے
بہتر رہتا ہے

درخت اپنے پھل خود نہیں کھاتے ہیں
دریا اپنا پانی خود نہیں پیتے
پتہ ہے کیوں ؟
کیونکہ دوسروں کیلئے جینا ہی
اصل زندگی ہے

زندگی آزمائشوں کا سمندر ہے
کسی سے لے کر آزمایا جاتا ہے
یا تو کسی کو بے تحاشا دے کے آزمایا جاتا ہے
بس کہیں صبر کی تو کہیں شکر کی آزمائش ہے

ہم ایک محدود زندگی میں
لامحدود منصوبوں پر عمل کرنا چاہتے ہیں
اور یہیں سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے

Exit mobile version