aqwal e zareen

Reality of Life

Reality of Life

ہم ضرورت کے وقت ضرورت مند
بن جاتے ہیں  اور ضرورت ختم ہوتے ہی
غیرت مند بن جاتے ہیں لیکن
کبھی بھی احسان مند نہیں بنتے

Hum zarort k waqat zarort mand ban jaty hain,Aur Zarort Khatam hoty hi Gherat mand ban jaaty hain,Laikn kabhi bhi Ahsan mand nahi banty

Reality of Life

انسان جب اندر سے ٹوٹ جائے تو
کسی بھی ماحول سے خوش نہیں ہوتا
چا ہے آس پاس بہت سے محبت اور
احساس کرنے والے ہی کیوں نہ ہوں

Insaan jab andar say toot jaye tu ,kesi bhi Mahol say Khush nahi hota,Chahy Aas paas ,Buhat say Muhabat aur Ahsas karny waly hi kun na hun

Reality of Life

اگر کسی غریب سے غلطی ہو جائے
تو وہ غلطی اُس کی سزا بن جاتی ہے
اور امیر کی غلطی اُس کی ادا بن جاتی ہے
یہی اِ س دُنیا کی حقیقت ہے

Agar kesi Ghareeb say Ghalti hu jaye,tu wo Ghalti ic ki saza ban jaati hai,Aur Ameer ki Ghalti ic ki ada ban jati hai,yahi ic dunya ki Haqeqat hai

Reality of Life

جو باتیں آپ کو ہرٹ کر رہی ہوتی ہیں
سمجھیں وہ سبق دے  رہی ہوتی ہیں
کہ آپ کبھی کسی سے وہ باتیں نہ کریں 

Jo Batain aap ko heart kar rahi hoti hain,Samjhain wo sabak day rahi hoti hain,K Aap kabhi kesi say wo batain na karain

Reality of Life

ساری زندگی کوئی جینے کی وجہ نہیں
پوچھتا لیکن مرنے والے دن سب پو چھتے کیسے مرا

Reality of Life

Sari zindagi koi jeeny ki waja nahi pochta,Lakin marny waly din sabhi pochty hain kesy mara

انسان کے اند ر دو کمزور یاں بہت عام ہیں
بھلانے کے قابل باتوں کو یا در کھنا
اور یاد رکھنے کے قا بل کو بھلا د ینا

Insaan k andar 2 Kamzoryan buhat aam hain,Bhulany k qabil baton ko yaad rakhna,Aur yaad rakhny k qabil baton ko bhula dena

دُنیا  کاسب سے اچھا تحفہ وقت ہوتا ہے
اور اگر کوئی آپ  کو وقت دیتا ہے
تو وہ آپ کو اپنی زندگی کا وہ پل دیتا ہے
جو کبھی لوٹ کر نہیں آتا

Dunya ka sab say acha tuhfa waqat hota hai,Agar koi aapko waqat deta hai,tu wo aapko apni Zindagi ka wo pal deta hai,jo kabhi loat kar nahi aata

جہاں ہم محفل میں    بیٹھ کر مزے سے
کسی غیر موجود شخص کی برائیاں بیان کرتے ہیں
یقین جا نیں وہاں سے اٹھتے ہی
ہماری برائیاں شروع ہو جاتی ہیں

Jahan hum Mahfil main Beth kar,Mazy say kesi Gher Mujud shakhas ki Burayan karty hain,Yaqeen jany wahan say uth’ty hi hamari Burayan shoro hu jati hain

Reality of Life

زندگی  بہت تھوڑی سی ہے کسی  سے نفرت یا
کسی کا برا سوچ کر شاید ہم اپنی انا کی تسکین تو کر لیں
گے مگر یقین جا نیے ہمارے اندر کا انسان
کبھی خوش نہیں رہے پا ئے گا

Zindagi Buhat thori c hai,kesi say nafrat ya kesi ka bura soch kar,shaid hum apni ana ki taskeen kar lain gay,Magr yaqeen janye Hamary andar ka insaan kabhi khush nahi rah paye ga

love quotes

دل کے دروازے کبھی مکمل بند نہ کر یں
غلطیاں انسانوں سے ہی ہوتی ہیں بعض لوگ
واپس لو ٹنا بھی چا ہتے ہیں
لیکن انہیں دروازے ہی بند ملتے ہیں

Dil k darwazy kabhi mukamal band na karain,Ghaltyan insano say hi hoti hain,Baaz log wapis Lotna bhi Chahty hain,laikn inhain darwazy band hi milty hain

Reality of Life

ہمارے  لہجے کی کڑ واہٹ ہمیشہ ہماری
اکڑنہیں ہوتی بلکہ  ہماری زندگی میں
برداشت کی ہوئی تلخیوں  کا نتیجہ ہوتا ہے

Hamary Lahjy ki Karwahat hamisha hamari Akar nahi hoti,Balk Hamary zindagi main ,Bardasht ki hoi Talkhyon ka nateja hota hai

loneliness quotes

تنہا ہونا یہ نہیں ہوتا کہ آپ کے پاس کوئی نہیں ہے
تنہا ہونا دراصل یہ ہوتا ہے کہ سب آپ  کے پاس ہیں
لیکن آپ کا کوئی نہیں ہے

Tanha hona ye nahi hota keh Aap k pas koi nahi hai,Tanha hona darasal ye hota hai keh, Sab aap k pas hain laikn aap ka koi nahi

Reality of Life

Reality of Life

Related Articles

Check Also
Close
Back to top button