Motyon say Qeemati Alfaz

Motyon say Qeemati Alfaz

کسی دو کوڑی کے انسان کے پیچھے بھاگنے سے بہتر ہے
کہ اپنے سپنوں کے پیچھے بھاگا جائے

Kesi 2 Kori insaan k pechy bhagny say bahtr hai,k apny sapno k pechy bhagain

بد نامی کا ڈر تو بس اُسے ہوتا ہے
جس میں  نام کمانے کی اُمید نہیں ہوتی

Badnami ka Dar tu bas usy hota hai,Jis main naam kamany ki umeed na ho

آئے ہو نبھانے جب کردار زمیں پر
کچھ ایسا کر چلو
کہ زمانہ مثال دے

Aye ho nibhany jab kirdar zameen par,Kuch aesa kar chalo k zamana Misal day

اُڑنے دو مٹی کہاں تک جائے گی
ہوا کا ساتھ چھوٹے گا
زمین پر ہی آئے گی

Urny do mati kahan tak jaye gi,Hawa ka sath choty ga tu zameen par hi aye gi

نیا دن ہے نئی بات کریں گے
کل ہار کر سوئے تھے
آج پھر نئے شروعات کریں گے

Naya Din hai nai baat karain,Kal haar k soye thy,Aaj phir nai Shorowat karain

دریا بن کر کسی کو ڈبونا بہت آسان ہے
مگر ذریعہ بن کر بچانا بہت مشکل ہے

Darya ban kar kesi ko Dabona Buhat asan hai,Magar Zarya ban kar Bachana Buhat Mushkil hai

آپ کی آج کی محنت
آپ کے کل کے سپنوں کی چابی ہے

Aap ki Aaj ki Mahnat ,Aap k kal k sapnon ki chabi hai

زندگی میں بُرا وقت صرف اسلیئے آتا ہے
کہ اپنوں میں چھپے غیر اور
غیر وں میں چھپے اپنے نظر آ جائیں

Zindagi main Bura waqat siraf ic leye aata hai,keh apno main chupy Gher aur Gheron main chupy Apny nazar aa jayen

الفاظ اتنے ہی باہر نکالنے چاہیے
جنہیں واپس لینا بھی پڑے تو
خود کو تکلیف نہ ہو

Alfaz itny hi baher naikalny chaheye,jinhain wapis lena bhi Pary tu Khud ko takleef na ho

Anmol

Exit mobile version